john elia poetry in urdu 744

John Elia Poetry in Urdu – جان ایلیا شاعری

John Elia Poetry In Urdu
To Bhi Chop Hai Main Bhi Chop Hon Yeh

تو بھی چپ ہے میں بھی چپ ہوں یہ کیسی تنہائی ہے
تیرے ساتھ تری یاد آئی کیا تو سچ مچ آئی ہے
Tu b chup hai mai b chup hun ye kaisi tanhai hai
Tery saath teri yaad I kia tu such much I hai

شاید وہ دن پہلا دن تھا پلکیں بوجھل ہونے کا
مجھ کو دیکھتے ہی جب اس کی انگڑائی شرمائی ہے
Shayad wo din pehla din tha palkain bojhal honey ka
Mujh ko dekhty he jab us ki angrai sharmae hai

اس دن پہلی بار ہوا تھا مجھ کو رفاقت کا احساس
جب اس کے ملبوس کی خوشبو گھر پہنچانے آئی ہے
Es din pehli bar huwa tha mujh ko rafaqat ka ehsas
Jab us kay malboos ki khushboo ghar pohnchany I hai

حسن سے عرض شوق نہ کرنا حسن کو زک پہنچانا ہے
ہم نے عرض شوق نہ کر کے حسن کو زک پہنچائی ہے
Hussan sy araz e shoq na karna hussan ko zak pohanchta hai
Hum nay araz e shoq na kar kay hussan ko zak pohanchai hai

ہم کو اور تو کچھ نہیں سوجھا البتہ اس کے دل میں
سوز رقابت پیدا کر کے اس کی نیند اڑائی ہے
Hum ko or to kuch nahi soojha albatta us ky dil mae
Sooz e raqabat paida kar kay us ki nend urai hai

ہم دونوں مل کر بھی دلوں کی تنہائی میں بھٹکیں گے
پاگل کچھ تو سوچ یہ تو نے کیسی شکل بنائی ہے
Hum dono mil kar bhi diloo ki tanhai mae bhatkain gay
Pagal kuch to soch ye tu nay kaisi shakal banae hai

عشق پیچاں کی صندل پر جانے کس دن بیل چڑھے
کیاری میں پانی ٹھہرا ہے دیواروں پر کائی ہے
Ishaq e pechan ki sundal par jany kis din bail charhy
Keyari par pani thehra hai dewaar par kaae hai

حسن کے جانے کتنے چہرے حسن کے جانے کتنے نام
عشق کا پیشہ حسن پرستی عشق بڑا ہرجائی ہے
Hussan kay jany kitnay chehry hussan kay jany kitny naam
Ishaq ka paisha hussan parasti ishaq bara harjae hai

آج بہت دن بعد میں اپنے کمرے تک آ نکلا تھا
جوں ہی دروازہ کھولا ہے اس کی خوشبو آئی ہے
Aaj bohat din baad main apnay kamray tak aa nikla tha
Joon he darwaza khola hai us ki khushboo aae hai

ایک تو اتنا حبس ہے پھر میں سانسیں روکے بیٹھا ہوں
ویرانی نے جھاڑو دے کے گھر میں دھول اڑائی ہے
Aik to itna habas hai phir mai saansain rokay betha hun
Veerani nay jhaaru day kar ghar mae dhool urahi hai

پوسٹ کو شیئر کریں۔۔

John Elia Poetry in Urdu – جان ایلیا شاعری” ایک تبصرہ

  1. Mai sehra sehra bhati teri cha mai
    Tera wajood khoua oske raah ma
    Mai muhbt ke mari mai qismat se haari
    Tu qismat ka sikandar tu muhbt ka aari
    Teri yaad ma jaly mera ruwan ruwan
    Teri azeyat se hai mera wajood dhuwa dhuwan
    Meri palkon k sitary dyty hain duhai
    Lout k aa ja mat ban harjai

تبصرے بند ہیں