Ajab hai kaif ajab hai khumar lyrics 227

عجب ہے کیف عجب ہے خمار آنکھوں میں

عجب ہے کیف عجب ہے خمار آنکھوں میں
عجب ہے کیف عجب ہے خمار آنکھوں میں

بسا ہوا ہے نبیﷺ کا دیار آنکھوں میں
بسا ہوا ہے نبیﷺ کا دیار آنکھوں میں

جو آئی یادِ مدینہ تو آنسوو ں کی طرح
چھپا لیا ہے اسے بے قرار آنکھوں میں

کھڑے ہوئے ہیں تیرے در پہ تیرے دیوانے
وفا کی نذر لیے اشک بار آنکھوں میں

قسم خدا کی مدینہ جنہوں نے دیکھا ہے
میں ڈھونڈ لوں گا وہ آنکھیں ہزار آنکھوں میں

تصورات میں طیبہ ہے روبرو شاعر
رچی ہوئی ہے مجسم بہار آنکھوں میں

عجب ہے کیف عجب ہے خمار آنکھوں میں
بسا ہوا ہے نبیﷺ کا دیار آنکھوں میں

پوسٹ کو شیئر کریں۔۔